Siyasi Manzar
قومی خبریں

دیوالی کے موقع پر اتراکھنڈ میں بڑا حادثہ Major accident in Uttarakhand on the occasion of Diwali

زیر تعمیر سرنگ کا ایک حصہ منہدم، تقریباً 40 مزدور پھنس گئے۔ امدادی کام جاری ہے۔

اتراکھنڈ 12نومبر(ایس ایم نیوز) دیوالی کے دن اتراکھنڈ کے اترکاشی میں ایک بڑا حادثہ ہوا ہے۔ اترکاشی میں سلکیارا سے ڈنڈلگاؤں تک زیر تعمیر سرنگ کا ایک حصہ منہدم ہو گیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ اس حادثے میں تقریباً 40 مزدور پھنسے ہوئے ہیں۔ ایس ڈی آر ایف اور پولیس ریونیو ٹیمیں بھی امدادی کاموں کے لیے موقع پر موجود ہیں۔ ریسکیو کام جاری ہے۔
این ایچ ڈی سی ایل کے سابق مینیجر نے بتایا کہ برہمکھل-پولگاؤں زیر تعمیر سڑک ٹنل جو سلکیار سے تقریباً 2340 میٹر دور بنائی گئی ہے کے سلکیار سائیڈ سے ٹنل کے 270 میٹر حصے کے قریب 30 میٹر کے علاقے میں گرنے والے ملبے کی وجہ سے تقریباً 35 سے 40 مزدورسرنگ کے اند پھنسے ہوئے ہیں۔

حادثہ شفٹ بدلنے کے دوران پیش آیا
نائٹ شفٹ کے کارکن ٹنل سے باہر آ رہے تھے، اگلی شفٹ کے کارکن اندر جا رہے تھے۔ سرنگ کے مرکزی دروازے سے تقریباً 300 میٹر کے فاصلے پر بالائی حصے سے ملبہ آنے کی وجہ سے ٹنل کو بند کر دیا گیا۔ یہاں سے تقریباً 2700 میٹر کے اندر 40 سے 50 مزدور کام کر رہے تھے۔
کام کی جگہ پر آکسیجن کی فراہمی کے لیے بچھائی گئی لائن بھی ملبے سے تباہ ہو گئی۔ تاہم پراجیکٹ حکام کا دعویٰ ہے کہ اندر پانی اور آکسیجن کی مناسب مقدار موجود ہے۔
پھنسے ہوئے کارکنوں کو بچانے کا واحد آپشن ٹنل سے ملبہ ہٹانا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ ٹنل کے اوپری حصے سے جتنا ملبہ ہٹایا جا رہا ہے اس سے زیادہ ملبہ آ رہا ہے۔ اس جگہ پر کوئی سخت چٹان نہیں ہے جہاں سے ملبہ ٹنل کے اوپری حصے سے آرہا ہے۔
یہ سرنگ آل ویدر روڈ پروجیکٹ کے تحت تعمیر کی جا رہی ہے۔
یہ اس منصوبے کی سب سے لمبی (ساڑھے چار کلومیٹر) ڈبل لین روڈ ٹنل ہے۔ اس کا تقریباً چار کلومیٹر تعمیر کیا جا چکا ہے۔ ٹنل کی تعمیر میں مزدور دن رات مصروف رہتے ہیں۔ فروری 2024 تک اس کی کھدائی مکمل کرنے کا ہدف ہے۔
یمونوتری قومی شاہراہ پر سلکیارا اور جنگل چٹی کے درمیان اس 4.5 کلومیٹر طویل جدید ترین سرنگ کی تعمیر سے گنگوتری اور یمونوتری کے درمیان فاصلہ 26 کلومیٹر کم ہو جائے گا۔
یہ سرنگ تقریباً 853 کروڑ روپے کی لاگت سے بنائی جا رہی ہے۔ ہائی ویز اینڈ انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ کارپوریشن لمیٹڈ (این ایچ آئی ڈی سی ایل) کی نگرانی میں، ڈبل لین ٹنل ملک کی پہلی جدید ترین سرنگ ہے جو نیو آسٹرین ٹنلنگ میتھڈ (NATM) کا استعمال کرتے ہوئے بنائی جا رہی ہے۔ نویوگ انجینئرنگ کمپنی نے جنوری 2019 میں اس کی تعمیر شروع کی تھی۔

Related posts

نہیں ہوسکے گی بیلٹ پیپر سے ووٹنگ

Siyasi Manzar

باپ کے موبائل چھیننے پر 16 سالہ لڑکے نے خودکشی کر لی، بچوں کو اس طرح کےنشے سے بچائیں۔

Siyasi Manzar

اسلام کے وجودکیلئے مدارس لازمی:مولانا ارشدمدنی Maulana Arshad Madani

Siyasi Manzar

Leave a Comment