Siyasi Manzar
Top News قومی خبریں

پہلے مرحلے میں 102 سیٹوں کی ووٹنگ اختتام پذیر

مغربی بنگال میں رائے دہندگان میں نظر آیا جوش شام تک پولنگ ہوا 77 فیصد سے زائد،بہار میں سب کم ووٹ ڈالے گئے ،عام طور پر طور پرامن رہا ماحول

نئی دہلی، 19 اپریل  لوک سبھا انتخابات کے پہلے مرحلے میں جمعہ کو 21 ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں کی 102 سیٹوں پر سخت حفاظتی انتظامات کے درمیان شام 5 بجے تک اوسطاً 59.66 فیصد ووٹنگ ہوئی۔الیکشن کمیشن کی طرف سے جاری کردہ معلومات کے مطابق شام 5 بجے تک مغربی بنگال میں سب سے زیادہ 77.57 فیصد اور بہار میں سب سے کم 46.32 فیصد ووٹ ڈالے گئے ۔پہلے مرحلے میں سب سے زیادہ 102 سیٹوں پر ووٹنگ ہو رہی ہے ۔مغربی بنگال کی تین سیٹوں پر 77.57 فیصد، تریپورہ کی ایک سیٹ پر 76.10 فیصد، منی پور کی دو سیٹوں پر 67.66 فیصد، میگھالیہ کی دو سیٹوں پر 69.91 فیصد اور آسام کی پانچ سیٹوں پر 70.77 فیصد ووٹ ڈالے گئے ۔ پڈوچیری کی ایک سیٹ پر 72.84 فیصد ووٹروں نے اور چھتیس گڑھ کی ایک سیٹ پر 63.41 فیصد ووٹروں نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔ اسی طرح جموں و کشمیر کی ایک سیٹ پر 65.08 فیصد، مدھیہ پردیش کی پانچ سیٹوں پر 63.25 فیصد، اروناچل پردیش کی دو سیٹوں پر 63.27 فیصد، سکم کی ایک سیٹ پر 68.06 فیصد اور ناگالینڈ کی ایک سیٹ پر 55.79 فیصد ووٹروں نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔میزورم کی ایک سیٹ پر 52.73 فیصد، اتر پردیش کی آٹھ سیٹوں پر 53.56 فیصد، اتراکھنڈ کی پانچ سیٹوں پر 57.54 فیصد، انڈمان اور نکوبار کی ایک سیٹ پر 56.87 فیصد، مہاراشٹر کی پانچ سیٹوں پر 54.85 فیصد، لکش دیپ کی ایک سیٹ پر 59.02 فیصد۔ راجستھان کی 12 سیٹوں پر 50.27 فیصد اور تمل ناڈو کی 39 سیٹوں پر 62.02 فیصد ووٹ ڈالے گئے ۔ووٹنگ صبح 7 بجے شروع ہوئی جو شام 6 بجے تک جاری رہے گی۔مغربی بنگال، شمال مشرقی راجستھان اور دیگر مقامات کے مختلف پولنگ اسٹیشنوں پر صبح سے ہی مرد و خواتین ووٹروں کی لمبی قطاریں لگ گئی تھیں۔ پہلی بار ووٹ کا حق حاصل کرنے والے نوجوان ووٹروں میں ووٹ ڈالنے کے حوالے سے کافی جوش و خروش تھا۔الیکشن کمیشن کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق، "تمام 21 ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں ووٹنگ کے پہلے مرحلے کا عمل آسانی سے اور پرامن طریقے سے جاری ہے ۔ اروناچل پردیش کی 60 اسمبلی سیٹوں اور سکم کی تمام 32 اسمبلی سیٹوں پر بھی آج ووٹنگ ہوئی۔ الیکشن کمیشن نے ووٹنگ کے آزادانہ اور غیرجانبدارانی انعقاد کو یقینی بنانے کے لیے مبصرین کو تعینات کر دیا ہے ۔تعیناتی کے علاوہ سیکورٹی کے وسیع انتظامات کئے گئے ہیں۔ چیف الیکشن کمشنر اپنے دو ساتھی الیکشن کمشنروں گیانیش کمار اور سکھویر سنگھ سندھو کے ساتھ کمیشن کے ہیڈکوارٹر سے پورے عمل کی نگرانی کر رہے ہیں۔

Related posts

جمعیۃعلماء ہند کی قانونی مدد سے 11مسلم نوجوانوں کی ضمانت کی درخواست منظور

Siyasi Manzar

 سی ایم بھوپیش بگھیل کا بڑا اعلان، حکومت بننے پر خواتین کو ہر سال 15 ہزار روپے ملیں گے CM Bhupesh Baghel

Siyasi Manzar

یونیسیف کے خیر سگالی سفیر ڈیوڈ بیکہم نے ہندوستان کے اپنے پہلے دورے پر لڑکیوں کو بااختیار بنانے اور مساوات کو فروغ دیا

Siyasi Manzar