Siyasi Manzar
کھیل

بی سی سی آئی پر الزام: بھارت نیوزی لینڈ سیمی فائنل کی پچ تبدیل کر دی گئی

BCCI blamed, India New Zealand semi-final pitch changed

اسپنرز کو فائدہ ہو سکتا ہے، آئی سی سی نے بھارتی بورڈ سے جواب مانگ لیا
ٹیم انڈیا نے 14 نومبر کو وانکھیڑے میں پریکٹس کی۔ اس دوران روہت شرما نے بھی پچ دیکھی۔ بھارت-نیوزی لینڈ کے سیمی فائنل میچ سے چند گھنٹے قبل وانکھیڑے اسٹیڈیم کی پچ کو تبدیل کرنے کی بات ہوئی ہے۔ میڈیا رپورٹس میں دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ میچ اب اس پچ کے بجائے کسی اور پچ پر کھیلا جائے گا جسے پہلے سیمی فائنل میچ کے لیے منتخب کیا گیا تھا۔ میچ دوپہر 2 بجے سے کھیلا جانا ہے۔سیمی فائنل میچ وانکھیڑے اسٹیڈیم کی پچ نمبر سات پر کھیلا جانا تھا۔ رپورٹ کے مطابق اب یہ پچ نمبر چھ پر ہوگی۔ ساتویں نمبر پر پچ تازہ تھی اور اس سے تیز گیند بازوں کی مدد کی امید تھی۔ اس کے ساتھ ساتھ اس ٹورنامنٹ کے دو میچ چھ نمبر کی پچ پر کھیلے جا چکے ہیں اس لیے یہ اسپنرز کے لیے مددگار ثابت ہو سکتے ہیں۔برطانوی میڈیا رپورٹ میں دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ جب بھارتی کوچ راہول ڈریوڈ ٹیم کے آخری لیگ میچ کے بعد ممبئی آئے تو وہ ایئرپورٹ سے سیدھے وانکھیڑے سٹیڈیم گئے اور گراؤنڈ سٹاف سے ملاقات کی۔بی سی سی آئی پر ٹیم انڈیا کی حمایت کا الزام بی سی سی آئی پر الزام لگایا جا رہا ہے کہ اس نے ہندوستانی ٹیم کو فائدہ پہنچانے کے لیے ایسا کیا ہے۔ اس معاملے کے بارے میں آئی سی سی سے پوچھا تو ایک اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر کہا – ہم نے بی سی سی آئی سے جواب مانگا ہے۔ جواب آنے کے بعد ہی آئی سی سی کوئی کارروائی کرے گی۔بی سی سی آئی نے اس الزام کو مسترد کیا، کہا- پچ کا انتخاب آئی سی سی کی خواہش کے مطابق کیا گیا تھا۔بی سی سی آئی نے ان الزامات کو یکسر مسترد کر دیا ہے۔ بورڈ کے ایک اہلکار نے بتایا – ورلڈ کپ کے ہر میچ کی پچ کا فیصلہ آئی سی سی کنسلٹنٹ کی موجودگی میں کیا جاتا ہے۔ ان کی ہدایات کے مطابق یہ طے ہوتا ہے کہ کس گراؤنڈ پر پچ کا نمبر استعمال کیا جائے گا۔ آئی سی سی یہ بھی طے کرتا ہے کہ پچ پر کتنی گھاس چھوڑی جائے گی۔ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن نے کہا- ہندوستانی ٹیم نے سست پچ کا مطالبہ کیا تھا۔دوسری جانب ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن نے اعتراف کیا ہے کہ انہیں بھارتی ٹیم کے انتخاب سے متعلق آگاہ کیا گیا تھا۔ ایم سی اے کے عہدیدار نے کہا- ہمیں پیغام ملا تھا کہ ہندوستانی ٹیم اس میچ میں سست پچ چاہتی ہے۔ اس لیے گھاس ہٹا دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ پچ سست ہوگی لیکن ایسا نہیں ہوگا کہ یہاں اسپنرز کو زیادہ مدد ملے گی۔
آئی سی سی کا اصول کیا کہتا ہے؟
آئی سی سی کی پلیئنگ کنڈیشنز کے مطابق گراؤنڈز اتھارٹی کو اپنے کسی بھی ایونٹ کے کسی بھی میچ کے لیے پچ کا انتخاب کرنے کا حق حاصل ہے۔ اس معاملے میں گراؤنڈ اتھارٹی ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن ہے۔ پلیئنگ کنڈیشنز میں کہیں بھی یہ نہیں بتایا گیا کہ پچ کی نوعیت کیا ہونی چاہیے۔ میچ شروع ہونے کے بعد پچ امپائرز کے کنٹرول میں آجاتی ہے۔وانکھیڑے اسٹیڈیم میں ون ڈے میچ کا ریکارڈوانکھیڑے اسٹیڈیم کی پچ بیٹنگ دوستانہ ہے۔ ٹورنامنٹ کا پانچواں اور آخری میچ اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا۔ یہاں اس ورلڈ کپ کے 4 میں سے 3 میچ پہلے بیٹنگ کرنے والی ٹیم نے جیتے ہیں۔وانکھیڑے نے اب تک کل 27 ون ڈے میچوں کی میزبانی کی ہے۔ اس میں پہلی اننگز میں بیٹنگ کرنے والی ٹیموں نے 14 اور دوسری اننگز میں بیٹنگ کرنے والی ٹیموں نے 13 میچ جیتے ہیں۔ یعنی اگر ہم پرانے ریکارڈز کو دیکھیں تو یہاں ٹاس کوئی اہم کردار ادا نہیں کرتا۔ یہاں ٹیم کا سب سے زیادہ اسکور 438 ہے جو جنوبی افریقہ نے 2015 میں ہندوستان کے خلاف بنایا تھا۔ سب سے کم اسکور 55 رنز ہے جو اسی ٹورنامنٹ میں سری لنکا نے بھارت کے خلاف بنایا تھا۔

Related posts

انڈیا نے جنوبی افریقہ کو 243 رنز سے ہرایا

Siyasi Manzar

آسٹریلیا 8ویں مرتبہ ورلڈ کپ کے فائنل میں،ایک بار پھر ٹوٹ گیا جنوبی افریقہ کا دِل، 19 نومبر کو انڈیا سے ہوگا مقابلہ

Siyasi Manzar

روہت شرما کے ٹسٹ کرکٹ میں چارہزاررن مکمل

Siyasi Manzar

Leave a Comment