Siyasi Manzar
قومی خبریں

دہلی میں زلزلہ: دیر رات زلزلے کے شدید جھٹکے سے زمین لرز اٹھی، دہلی-این سی آر کے ساتھ ساتھ یوپی-بہار میں بھی جھٹکے محسوس کیے گئے

نئی دہلی 04 نومبر(سیاسی منظرنیوز)دیر رات دہلی-این سی آر میں زلزلے کے شدید جھٹکے محسوس کیے گئے۔ دہلی کے ساتھ ساتھ یوپی-بہار میں بھی زلزلہ آیا ہے۔ نیشنل سیسمولوجی سینٹر کے مطابق زلزلے کی شدت ریکٹر اسکیل پر 6.4 ریکارڈ کی گئی ہے۔ معلومات کے مطابق رات 11.32 بجے زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے۔ زلزلے کا مرکز نیپال تھا۔ دہلی این سی آر میں زلزلے کے بعد لوگ گھروں سے باہر نکل آئے۔ یہ خوش قسمتی ہے کہ فی الحال کسی جانی و مالی نقصان کی کوئی خبر نہیں ہے۔ تقریباً ایک منٹ تک زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے۔ آپ کو بتا دیں کہ اس سے قبل 22 اکتوبر کو دہلی میں زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے تھے۔ اس کی شدت 6.1 تھی۔
زلزلے کے بعد لکھنؤ میں لوگ گھروں سے باہر نکل آئے۔ لوگوں نے بتایا کہ وہ سونے کی تیاری کر رہا تھا کہ اچانک پنکھا ہلنے لگا تو باہر کی طرف بھاگا۔ لوگوں نے اپنے رشتہ داروں کو فون کرکے ان کی خیریت دریافت کی۔ اکثر ایسا ہوتا ہے کہ زلزلے کے بعد آفٹر شاک آتا ہے، ایسے میں لوگ دیر تک گھروں کے باہر کھڑے رہتے ہیں۔
گزشتہ ماہ 22 اکتوبر کو آنے والے زلزلے کا مرکز بھی نیپال تھا۔ نیپال میں 4 زلزلے آئے۔ زلزلے کا پہلا جھٹکا صبح 7 بج کر 39 منٹ پر آیا۔ جس کی شدت ریکٹر اسکیل پر 6.1 ناپی گئی ہے۔ اس کے بعد 4.2 شدت کے زلزلے کا دوسرا جھٹکا 8 بجکر 8 منٹ پر آیا۔زلزلے کا تیسرا جھٹکا صبح 8 بج کر 28 منٹ پر محسوس کیا گیا، جس کی شدت 4.3 تھی۔ اس کے بعد 8 بجکر 59 منٹ پر چوتھی بار زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے۔
زلزلوں کی اصل وجہ یہی ہے زمین کے اندر 7 پلیٹیں ہیں جو مسلسل گردش کر رہی ہیں۔ وہ جگہیں جہاں یہ پلیٹیں سب سے زیادہ ٹکراتی ہیں انہیں فالٹ لائن زون کہا جاتا ہے۔ پلیٹوں کے کونے بار بار ٹکرانے کی وجہ سے جھک جاتے ہیں۔ جب دباؤ بہت زیادہ ہو جاتا ہے تو پلیٹیں ٹوٹنے لگتی ہیں۔ ان کے ٹوٹنے کی وجہ سے اندر کی توانائی باہر آنے کا راستہ تلاش کرتی ہے۔ اس خلل کے بعد زلزلہ آتا ہے، جانئے کون سا زلزلہ خطرناک ہے؟ زلزلے کی زیادہ سے زیادہ شدت کا ابھی تک تعین نہیں ہو سکا ہے۔ تاہم، ریکٹر اسکیل پر 7.0 یا اس سے زیادہ شدت کے زلزلے کو معمول سے خطرناک سمجھا جاتا ہے۔ اس پیمانے پر 2 یا اس سے کم شدت کے زلزلوں کو مائیکرو زلزلے کہتے ہیں جو زیادہ تر محسوس نہیں ہوتے۔ 4.5 کی شدت کا زلزلہ گھروں کو نقصان پہنچا سکتا ہے۔

Related posts

بی جے پی کی فلاحی اسکیموں سے ہر طبقہ مستفید ہوا ہے:جمال صدیقی

Siyasi Manzar

منّا قریشی: اتراکھنڈ کی ٹنل میں پھنسے مزدوروں کو نکالنے والاہیرو

Siyasi Manzar

اُڈما کے پلیٹ فارم سے عید ملن کے ذریعہ ملک کے باشندگان کو قومی یکجہتی کا پیغام دیا گیا

Siyasi Manzar

Leave a Comment