Siyasi Manzar
علاقائی خبریں

تعلیم کے ساتھ ساتھ اپنی مٹی سے جڑے رہیں اور اپنے فرائض انجام دیں : ڈاکٹررگھوراج

ہمارا فرض ہے کہ ہم اپنے اردگرد کے ماحول کو محفوظ رکھیں اور اسے خوبصورت بنائیں : ڈاکٹر سراج الدین ہاشمی

امروہہ،20اپریل ( سالار غازی )رگھوراج پیپل مین فاؤنڈیشن اور ہاشمی پی جی کالج امروہہ کے زیراہتمام، دنیا میں تیزی سے بڑھتے ہوئے درجہ حرارت، موسمیاتی تبدیلیوں کو کم کرنے اور لوگوں کو ماحولیاتی تحفظ اور عوامی بیداری کے لیے، مزید زمینی ماحولیاتی نقصان کو کم کرنے کے لئے رگھوراج پیپلز مین ریسرچ کمیٹی اور ہاشمی پی جی کالج امروہہ کے اشتراک سے دو روزہ بین الاقوامی ماحولیاتی تحفظ سیمینار کا انعقاد کیا۔ ماحولیاتی مسائل کو ذہن میں رکھتے ہوئے پائیدار ترقی کو فروغ دینا” کے عنوان سے منعقد اس سیمینار میں رگھوراج پیپل مین فاؤنڈیشن کے بانی پیپل مین ڈاکٹر رگھوراج اور ہاشمی پی جی کالج کے چیئرمین ڈاکٹر سراج الدین ہاشمی ایڈوکیٹ اور ڈاکٹر غیاث الدین ہاشمی اور ریسرچ کمیٹی کی چیئرپرسن ڈاکٹر نمرتا جین مرادآباد نے ماحولیات کے تحفظ کا پیغام دیا۔ جس میں مہمان خصوصی صدر جمہوریہ ہند ایوارڈ اعزاز یافتہ پدم شری بھارت بھوشن تیاگی بلند شہر کی باوقار موجودگی کے ساتھ ساتھ سابق ایم ایل اے دہلی پنکج پشکر، رگھوراج پیپل مین فاؤنڈیشن کے ڈائریکٹر نتیش کمار بندہ، رجنی مندرے، پونم ڈکشٹ ہاتھرس سمیت خصوصی مہمانوں نے شرکت کی۔ رتنیش راگھو چندر ناتھ آسام، دیگر معزز اراکین بھی موجود رہے سیمینار میں تقریباً دو سو بچوں نے حصہ لیا اور بین الاقوامی سیمینار کا وقار بڑھایا اس کے ساتھ ہی رگھوراج پیپل مین فاؤنڈیشن کی طرف سے تمام اسکالرز کو انوائرمنٹ پروٹیکشن رتن ایوارڈ سے بھی نوازا گیا، جس کے بانی ڈاکٹر رگھوراج جی۔ رگھوراج پیپل مین فاؤنڈیشن نے شرکا کا شکریہ ادا کیا۔ اپنے خیالات کے ساتھ ساتھ انہوں نے بچوں کو ماحولیاتی تحفظ کے بارے میں بھی آگاہ کیا اور کہا کہ وہ تعلیم کے ساتھ ساتھ اپنی مٹی سے جڑے رہیں اور اپنے فرائض انجام دیں۔چیئرمین ہاشمی ایجوکیشنل گروپ ڈاکٹر سراج الدین ہاشمی ایڈوکیٹ نے بچوں کو مبارکباد دی۔ بتایا کہ ہم قدرت میں پیدا ہوئے ہیں اور ہمیں قدرت سے ہر چیز مفت ملتی ہے، اس لیے یہ ہمارا فرض ہے کہ ہم اپنے اردگرد کے ماحول کو محفوظ رکھیں اور اسے خوبصورت بنائیںجس کی ایک مثال ہاشمی پی جی کالج ہے۔ یہاں قدرت کی خوبصورتی کو محفوظ کرنے اور فروغ دینے پر خاص توجہ دی جاتی ہے میں آپ سے گزارش کروں گا کہ درخت لگا کر قدرت کو سنواریں، اس سلسلے میں ڈاکٹر رگھوراج نے پروگرام کی اختتامی تقریر میں بتایا کہ یہ بین الاقوامی سیمینار آف لائن منعقد کیا گیا تھا۔ 19 اپریل کو اور 20 اپریل کو آن لائن میڈیم میں منعقد ہوا۔ جس میں دنیا کے کئی ممالک کی عظیم شخصیات نے شرکت کی جس نے لوگوں کے درمیان ماحولیاتی مسائل کے ساتھ ساتھ سیمینار کے ذریعے پائیدار ترقی کو ممکن بنایا جو کہ آج کے بین الاقوامی سیمینار میں دنیا کے درجہ حرارت اور موسمیاتی تبدیلیوں کو کم کرنے میں مددگار ثابت ہوگا۔ تمام سکالرز کی باوقار موجودگی سے بین الاقوامی سیمینار کامیاب رہا مجھے امید ہے کہ اس سیمینار کے ذریعے لوگوں میں ماحولیاتی تحفظ کے بارے میں آگاہی پیدا ہو گی تاکہ درجہ حرارت کو کم کیا جا سکے اور موسمیاتی تبدیلیوں کو کم کیا جا سکے۔

Related posts

ریاست تلنگانہ کے تمام مسلم ووٹرز سے حق رائے دہی استعمال کرنے کی اپیل

Siyasi Manzar

بی جے پی نفرت انگیز ایجنڈے کے ساتھ لوگوں کو تقسیم کر رہی ہے جو ملک کی سلامتی اور سالمیت کے لیے تباہ کن ہے: ایس ڈی پی آئی

Siyasi Manzar

ندوی علوم حدیث کے وفد نے رضا لائبریری کا دورہ کیا

Siyasi Manzar