Siyasi Manzar
راجدھانی

کیجریوال حکومت مزید 83دکانوں اور کاروباری اداروں کو 24گھنٹے کھولنے کی اجازت دی

نئی دہلی، 19نومبر(ایس ایم نیوز) دہلی میں رات کی زندگی، اقتصادی سرگرمیوں اور روزگار کو فروغ دینے کے ارادے سے، کیجریوال حکومت نے 83دکانوں اور کاروباری اداروں کو 24گھنٹے چلانے کی اجازت دی ہے۔ وزیر اعلی اروند کیجریوال نے دہلی کے لیبر ڈپارٹمنٹ سے موصولہ تجویز کو اپنی منظوری دے دی ہے۔ یہ کاروباری ادارے دکان، تجارتی، ریستوراں، اسٹیبلشمنٹ، خوردہ صرف تجارتی زمرے ہیں۔ دکانوں کے مالکان کو دہلی شاپ اسٹیبلشمنٹ ایکٹ 1954 میں دی گئی دفعات اور قواعد پر سختی سے عمل کرنا ہوگا۔ حکومت ان دکانوں کی نگرانی بھی جاری رکھے گی، تاکہ اگر کوئی قواعد کی خلاف ورزی کرتا ہے تو کارروائی کی جا سکے۔ میں کاروباری اداروں کے 24 گھنٹے آپریشن سے معیشت کو فروغ ملے گا اور نوجوانوں کے لیے روزگار کے نئے مواقع بھی پیدا ہوں گے۔ اب ایل جی سے تجویز کی منظوری ملنے کے بعد یہ دکانیں 24گھنٹے کام کر سکیں گی۔دہلی شاپس اینڈ اسٹیبلشمنٹ ایکٹ 1954 کے تحت 24 گھنٹے دکانیں چلانے کے خواہشمند 122 لوگوں نے دہلی کے لیبر ڈیپارٹمنٹ کو آن لائن درخواست دی تھیں۔ محکمہ محنت کی جانب سے ان درخواستوں اور دستاویزات کی مکمل جانچ پڑتال کی گئی جس میں معلوم ہوا کہ 122 درخواستوں میں سے 29 درخواستوں میں خامیاں تھیں۔ یہ اس بنیاد پر ان درخواستوں پر غور نہیں کیا گیا۔ جبکہ دہلی شاپس اینڈ اسٹیبلشمنٹ ایکٹ 1954 کے قواعد کے مطابق 83 درخواستوں کے تمام ضروری دستاویزات درست پائے گئے۔ اس لیے ان کاروباری اداروں کی درخواستیں منظور کر لی گئی ہیں۔کاروباری اداروں کے مالکان کو دہلی شاپ اسٹیبلشمنٹ ایکٹ 1954 کے سیکشن 14، 15اور 16 میں دی گئی دفعات پر سختی سے عمل کرنا ہوگا۔ مثال کے طور پر، خواتین ملازمین کو گرمیوں کے موسم میں رات 9 بجے سے صبح 7 بجے تک اور سردیوں کے موسم میں شام 8 بجے سے صبح 8 بجے تک کسی بھی ادارے میں کام کرنے کی اجازت نہیں ہے۔ دکانیں مقررہ وقت میں کھولنا اور بند کرنا ہوں گی۔ اگر اس کی خلاف ورزی کی گئی تو دکان بند ہو سکتی ہے۔ اگر گاہک انتظار کر رہے ہیں تو دکان کھولنے کے لیے 15 منٹ کا اضافی وقت ہوگا۔ مختلف علاقوں میں دکانیں کھولنے یا بند کرنے اور مالکان کے لیے مختلف اوقات ہو سکتے ہیں۔اس پر عمل کرنا پڑے گا۔قابل ذکر ہے کہ پچھلے کچھ سالوں میں دہلی کے اندر 24 گھنٹے دکانیں اور کاروباری اداروں کو چلانے کی اجازت لینے والوں کی تعداد میں تاریخی اضافہ ہوا ہے۔ پچھلے کچھ سالوں میں، وزیر اعلی اروند کیجریوال نے 635 دکانوں اور کاروباری اداروں کو 24گھنٹے کام کرنے کی اجازت دی ہے۔ اس سے پہلے،گزشتہ اگست میں وزیراعلیٰ نے29دکانوں اور کاروباری اداروں کو اجازت دی تھی جس کے بعد ان کی تعداد بڑھ کر552 ہوگئی ہے ۔ اب مزید 83 دکانوں کی اجازت ملنے کے بعد ان کی تعداد بڑھ کر 635ہو گئی ہے۔ دوسری جانب 1954 سے 2022تک تقریباً 68 سالوں میں صرف 269 دکانوں اور اداروں کو 24 گھنٹے کام کرنے کی اجازت دی گئی ہے۔درحقیقت، کیجریوال حکومت دہلی میں کاروباری سرگرمیوں کے لیے سازگار ماحول پیدا کرنے کے لیے بہت سنجیدگی سے کام کر رہی ہے، تاکہ اسے فروغ دیا جا سکے۔ حکومت نے کاروباری سرگرمیوں کی حوصلہ افزائی اور اقتصادی ترقی کو مضبوط بنانے کے لیے فعال اقدامات کیے ہیں۔ وزیراعلیٰ اروند کیجریوال کا مثبت رویہ کاروباری اداروں کو 24 گھنٹے چلانے کے خواہشمند دکانداروں کی تعداد بڑھ رہی ہے۔ کاروباری اداروں کو 24 گھنٹے کام کرنے کی اجازت دینے کے پیچھے حکومت کا مقصد روزگار کے مزید مواقع پیدا کرنا اور دہلی کی معیشت کی مجموعی ترقی کو فروغ دینا ہے۔ اس سے کاروباری اداروں کو مدد ملے گی۔صارفین سے توقع کی جاتی ہے کہ دونوں پر یکساں طور پر مثبت اثر پڑے گا۔ اس کے علاوہ تاجروں کو زیادہ گھنٹے خدمات فراہم کرنے کی اجازت دینے سے عوام کو بھی بہتر سہولیات میسر ہوں گی اور وہ 24 گھنٹے ضروری اشیاء اور خدمات استعمال کر سکیں گے۔اس کے ساتھ ہی وزیراعلیٰ اروند کیجریوال کی مداخلت کے بعد دہلی میں انسپکٹر راج مکمل طور پر ختم ہو گیا ہے۔ اب دکانوں اور کاروباری اداروں کو چلانے کے لیے درخواست کا عمل آن لائن کر دیا گیا ہے۔ جس کی وجہ سے تاجروں کو سرکاری دفاتر کے چکر لگانے کی ضرورت نہیں ہے۔درخواست کے چار ہفتوں کے اندراس کے بعد ہی تصدیق کا کام مکمل ہوتا ہے۔ مزید برآں، دکانوں اور کاروباری اداروں کو 24 گھنٹے کام کرنے کی اجازت دینے کا فیصلہ دہلی میں تجارت کو فروغ دینے اور "کاروبار کرنے میں آسانی” کے حکومت کے وژن کی عکاسی کرتا ہے۔ مزید، اگر کوئی درخواست دہندہ مطلوبہ منظوری حاصل کرنے میں ناکام رہتا ہے۔پھر بھی، حکومت درخواست گزار کو گائیڈ لائنز کے مطابق اپنی کوتاہیوں کو دور کرنے اور دوبارہ منظوری حاصل کرنے کا موقع دیتی ہے۔ ان کیٹیگریز کی دکانیں کھولنے کی منظوری مل گئی۔
دہلی حکومت نے جن دکانوں کو 24 گھنٹے چلانے کی اجازت دی ہے ان میں دکانوں کے کئی زمرے ہیں۔ مثال کے طور پر، دکان کے زمرے میں ایک ایک دکان دوارکا، ماتا سندری، نیتا جی سبھاش پلیس، کرول باغ، سریتا وہار، کملا نگر، دوارکا، سلیکٹ سٹی، گریٹر کیلاش میں کھلے گی۔ اسی طرح ڈیفنس کالونی اور آئی جی آئیائیرپورٹ پر ریسٹورنٹ کی ہر دکان 24 گھنٹے کھلی رہے گی۔ راجوری گارڈن، ککرولا، لکشمی نگر میٹرو اسٹیشن، روشنارا سبزی منڈی، پیتم پورہ، چندراولی، اوکھلا انڈسٹریل ایریا اور فیز 2، سیکٹر 3 روہنی، صنعت نگر، دھیر پور، یمنا بینک، پالم ڈابری، منگولپوری انڈسٹریل ایریا، نارا پورہکرشنا نگر، نانگلی، بامنولی، حوز خاص، دشرت پوری میٹرو اسٹیشن، پشتہ کرتار نگر، دوارکا، سبھاش نگر، میور وہار فیز 1، گھیتورنی میٹرو اسٹیشن، آئی جی آئی ایئرپورٹ، مٹیالا، کرالہ، نریلا، اتم نگر، براڑی، گوتم نگر، روہی ویلکم میٹرو اسٹیشن سیکٹر 19 پر کمرشل دکانیں کھولنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔اس کے علاوہ یمنا وہار، سبھاش کمپلیکس GK-2 میں کچھ پرچون تجارت کی دکانوں کو 24 گھنٹے کام کرنے کی اجازت دی گئی ہے۔ جن دکانداروں کو 24 گھنٹے اپنی دکانیں چلانے کی اجازت دی گئی ہے انہیں دہلی شاپ اسٹیبلشمنٹ ایکٹ 1954 میں دی گئی دفعات پر سختی سے عمل کرنا ہوگا۔ قوانین کیخلاف ورزی پر سخت کارروائی کی جائے گی۔

Related posts

دہلی میں لیفٹننٹ گورنر وی کے سکسینہ نے آئی ای سی وین کو جھنڈی دکھا کر روانہ کیا

Siyasi Manzar

پی ایم مودی نے خواجہ معین الدین چشتی کی درگاہ کے لیے ارسال کی چادر، بی جے پی اقلیتی محاذ کے قومی صدر جمال صدیقی قافلے کے ساتھ اجمیر کے لیے روانہ

Siyasi Manzar

Salahuddin Khan Aam Aadmi Party:صلاح الدین خان کو عام آدمی پارٹی میں ملی نئی ذمہ داری

Siyasi Manzar

Leave a Comment